اکابرین کی آمداوران کاخراج تحسین

                                   سب کوتعلیم وتعلم میں مشغول پایا!

فقیہ العصرحضرت مولانامفتی عبدالرؤف سکھروی صاحب مدظلہم
مفتی داراالعلوم کراچی

ناچیزعبدالروؤف سکھروی کی اپنے احباب کے ساتھ جامعہ اشرفیہ مانکوٹ میں حاضری ہوئی مولانامحمداحمدانورصاحب مدظلہم اوردیگراساتذہ کرام اورطلبہ عظام سے مل کردل خوش ہوا،ماحول بہت پرسکون اورپرفضامحسوس ہوا،سب کوتعلیم وتعلم میں مشغول پایا،جوبڑی نعمت ہے۔
    دل وجان سے دعاہے کہ اللہ تعالی اس کو شرف قبولیت عطافرمائیں اوردین ودنیاکی ترقیات عطافرمائیں،صدق واخلاص اورورع وتقوی کی دولت عطافرمائیں،ہرطرح کی سہولتیں عطافرمائیں اوراپنی بارگاہ میں ہم سب کورضاء کامل نصیب فرمائیں،آمین یاربالعالمین وصلی اللہ تعالی علی النبی الکریم محمدوآلہ واصحابہ اجمعین ۔

٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭

ظاہری وباطنی دولت سے مالامال جامعہ!

      مذہبی سکالرحضرت مولانامفتی ابولبابہ شاہ منصورصاحب مدظلہم
 جامعة الرشیدکراچی

نحمدہ ونصلی علی رسول الکریم امابعد!
جامعہ اشرفیہ مان کوٹ کے متعلق عرصہ درازسے سنتے آئے تھے کہ یہاں ماشاء اللہ صرف ونحو کی بالخصوص اوردیگرفنون کی بالعموم ایسی تعلیم دی جاتی ہے کہ کمزورطلبہ بھی ذی استعدادبن کرواپس جاتے ہیں۔اوربقیہ زندگی علوم دینیہ کی خدمت میں بطریق احسن صرف کرتے ہیں سناتھاکہ کتنے ہی فضلاء جواپنی بے بضاعتی کے ہاتھوں عاجزتھے یہاں ایک چلہ لگانے کے بعداللہ تعالی کے فضل سے ذی استعدادمدرس بن گئے آج جب یہاں بسلسلہ قرآنی عربی حاضری ہوئی توجوسناتھااس سے بڑھ کرپایاعلم کیساتھ اصلاح وتربیت اوراورادوظائف کاماحول بھی قائم ودائم ہے اورطلبہ وعلماء ظاہری وباطنی دونوں طرح کی دولت سے فیض یاب ہورہے ہیں اوردوردرازدیہات میں واقع اس دینی ادارے کی یہ خصوصیت قابل رشک ہے اللھم زدفزداس ادارے سے میرے شیخ حضرت پیرذوالفقارنقشبندی دامت برکاتہم کو بھی نسبت ہے اس عاجزکی دلی دعاہے کہ اللہ تعالی اس کودن دگنی رات چگنی ہرطرح کی ترقی نصیب فرمائیں اوراس کودرکارتمام مادی وروحانی وسائل اپنے غیب  کے خزانوں سے پیدافرمائے۔

٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭

یہ جامعہ اکابرکے مزاج کے مطابق ہے!
حضرت مولاناراحت علی ہاشمی صاحب مدظلہم
ناظم تعلیمات دارالعلوم کراچی
نحمدہ ونصلی علی رسولہ الکریم !
امابعد:حفاظت دین اوراشاعت طریقہ سنت کیلئے اللہ تعالی نے مدارس دینیہ کی صورت جاری فرمارکھی ہے بفضلہ تعالی ملتان کے نواح میں ایک ایسی ہی شمع روشن ہے جوکہ امت مسلمہ کیلئے دینی وتربیتی راہنمائی کے اہم فریضہ کو انجام دیتی رہے گی،احقرآج ٣جمادی الثانی اس مبارک درسگاہ کی سعادت سے بہرہ مندہواجس کے بانی حضرت اقدس مولانامحمداشرف شادرحمہ اللہ ہیں اب ان کے جانشین فرزند مولانامحمداحمدانورصاحب حفظہ اللہ ہیں ،اس سلسلہ خیرکوترقی اوراستحکام دینے میں ہمہ وقت فکرمنداورپیہم کوشاں ہیں،بفضلہ تعالی مسلمان بچوں اوربچیوں کی دینی تعلیم وتربیت کاجوسلسلہ جہاں جاری ہے یہ اکابرعلماء کے مزاج کے مطابق ہے،اورنظم ونسق میں احتیاط وتیقظ پیش نظررہتاہے طلبہ کواتباع سنت اعتدال فکروعمل کی تلقین کی جاتی ہے اللہ تعالی کی ذات کریم سے امیدہے کہ وہ اس درسگاہ کوقبول فرمائیں گے اوراس کے تمام شعبہ ہائے تعلیم وتعمیرکوبحسن وخوبی   ترقیات سے مالامال فرماتے رہیں گے،اللہ تعالی ہم سب کواس ادارے کے ساتھ دلی تعاون کرنے کی اوردعاؤں میں شریک رکھنے کی توفیق عطافرمائیں اورادارہ کے تمام اساتذہ طلبہ ومعانین کواپنی رضائے کاملہ نصیب فرماتے رہیں،وصلی اللہ علی خیرخلقہ محمدوآلہ وصحبہ اجمعین
٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭
اخلاص وتقوی کے اثرات محسوس ہورہے ہیں!
متکلم اسلام مولانامحمدالیاس گھمن صاحب مدظلہم
جامعہ اشرفیہ مان کوٹ ضلع خانیوال میں حاضری کاموقع ملاطلبہ سے بعدازعصرگفتگوکاشرف بھی اہل جامعہ نے بخشا،جامعہ اشرفیہ حضرت مولانامحمداشرف شادرحمہ اللہ کی علمی یادگارہے اورحضرت کے فرزندحضرت مولانامفتی محمداحمدانورصاحب زیدمجدہ بحمداللہ تعالی حضرت کی نیابت کاحق اداکررہے ہیں جامعہ میں بیٹھ کرمجھ جیسے کم علم اوربے عمل کوبھی علم واخلاص اورتقوی کے اثرات محسوس ہورہے ہیں جامعہ کی فضا میں حق تعالی نے عجیب روحانیت وسکون رکھاہے حق تعالی خزانہ غیب سے ساری ضروریات پوری فرمائیں، ظاہری وباطنی ترقیات سے نوازیں، حضرت علیہ الرحمہ کیلئے صدقہ جاریہ بنادے،دین کی اشاعت ودفاع اورنفاذکاذریعہ بنائے۔
طلبہ میں اللہ کارنگ غالب ہے!
شیخ طریقت حضرت ڈاکٹرشاہداویس صاحب مدظلہم
صدرآس اکیڈمی لاہور
نحمدہ ونصلی علی رسولہ الکریم مدرسہ کاماحول دیکھ کرقرون اولی کی یادتازہ ہوگئی ماحول میں وسعت محبت اورحضورۖکی نسبت محسو س ہوتی ہے طلبہ میں صبغة اللہ یعنی اللہ تعالی کارنگ غالب ہے اساتذہ باہمت پرجوش اورذی استعدادمحسوس ہوتے ہیں شیخ الحدیث مولانامحمداحمدانورصاحب مدظلہم کی شخصیت بہت دل کولبھاتی ہے۔
اللہ تعالی سے دعاہے کہ اللہ تعالی اس گلشن کوتاقیامت آبادرکھے اوراس کوعلم کاگہوارہ بنائے اوراس کی علمی شعاعوں اورفیض کوسارے عالم میں پھیلادے،دعاہے کہ اللہ تعالی ہرآنے والے طالبعلم کواپنے مقرب بندوں میں شامل فرمائے آمین ۔
٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭
تعلیمی حالت بحال ہے!
حضرت مولانا بختیارحسین صاحب مدظلہم
مدرسة الرحمان دکن خان ڈھاکہ بنگلہ دیش
حضرت مولاناعبیدالرحمن ندوی دامت برکاتہم کے ساتھ سفرپاکستان کیلئے مختصروقت میں پاکستان آیا،تواپنے چھ سالہ مادرعلمی جامعہ اشرفیہ مان کوٹ میںبھی حاضری نصیب ہوئی ،مدرسہ کی حالت دیکھ کراتنی مسرت ہوئی کہ استاذمرحوم مولانامحمداشرف رحمہ اللہ کی قابل اولاد مولانا محمداحمدانورصاحب مدظلہم مولاناابوبکرمدنی صاحب مدظلہم مولانامحمدعمرمجاہدصاحب مدظلہم مولانامحمدعثمان مکی صاحب مدظلہم نے استاذکی محنت واخلاص کی نشانی بن کرمدرسہ کوفروغ دینے میں اپنی ذاتی مفادکوقربان کرکے مدرسہ کے مفادکوپیش نظر رکھا،جس کانتیجہ ہم اپنی آنکھوں سے دیکھ رہے ہیں ۔
پندرہ سال قبل مدرسہ تعمیرکے لحاظ سے جس خستہ حالی میں دیکھاتھاآج اس سے یکسرمختلف ہے،اورتعلیم میں پختگی اب بھی یہی حال ہے کہ ١٥سال میں نئی تعمیرات میں ترقی ہوئی، اور تعلیمی حالت پہلے کی طرح بحال ہے اللہ تعالی یہی اخلاص بحال رکھیں،اورتعمیری ترقی بھی ہوتی رہے مقصودنہ ہو۔
٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭
جامعہ اسلاف کی یادگارہے!
حضرت مولانامشرف علی تھانوی صاحب مدظلہم
مہتمم جامعہ اسلامیہ لاہور
نحمدہ ونصلی علی رسولہ الکریم امابعد
آج ٤مئی ٢٠١٣ء جامعہ اشرفیہ مانکوٹ ملتان مولانامحمداشرف علی صاحب مدظلہم مدیر جامعہ اسلامیہ محمودیہ سرگودھاکی معیت میںحاضری کی سعادت ملی،اس مدرسہ کاتذکرہ بہت پہلے سے سناہواتھامگرحاضری آج میسرہوئی جامعہ کودیکھ کرطبیعت بہت خوش ہوئی۔
الحمدللہ اسلاف کی یادگارہے عزیزالقدرمولانامحمداحمدانورسلمہ اللہ اوران کے رفقاء کی شب وروزکی کاوشیں رنگ لارہی ہیں،اللہم زدفزدیہ دینی مراکزدرحقیقت حق تعالی کی عطافرمودہ صلاحیتوں کوصحیح مصرف میں استعمال کرنے اوران کاشکراداکرنے کی عملی شکلیں ہیں ۔
اللہ تعالی اخلاص کے ساتھ مزیدخدمات کی توفیق عطافرمائیں اورقبول فرمائیں
یہ جامعہ ظاہر ی وباطنی انوارات سے معمورہے!
حضرت مولاناقاری سیف اللہ صاحب مدظلہم
مہتمم جامعہ فاروق اعظم وخطیب مرکزی جامع مسجدفاروقیہ مری شہر
آج مورخہ ١٢ربیع الاول ١٤٢٩ھ بروزجمعة المبارک جامعہ اشرفیہ مان کوٹ حضرت اقدس عالم اجل مولانامحمداشرف شادرحمہ اللہ کے دینی ادارہ میں حاضری کاشرف حاصل ہواحضرت رحمہ اللہ کے ابتداء کے تلامذہ میں احقرکوشامل ہونے کاشرف حاصل ہے۔
حضرت اقدس کی زندگی میں حاضرنہ ہوسکاجس کی حسرت اورقلق رہے گاحضرت رحمہ اللہ کی قبرمبارک پرحاضری دی،جس جامعہ میں حضرت نے اپناخون پسینہ لگایاآج الحمدللہ یہ جامعہ ظاہری باطنی انوارات سے معمورہے ان کے تمام صاحبزادے ان کے نقوش کواپنائے ہوئے ہیں ان کے جانشین مولانامفتی محمداحمدانورصاحب مدظلہم الولدسرلابیہ کاحقیقی نمونہ ہیں،ان میں تواضع منکسرالمزاجی اورمہمان نوازی اورظاہری وباطنی کمالات واضح ہیں حضرت رحمہ اللہ کی زندگی ایک طرح جامع تھی طلبہ سے محبت ان میں کوٹ کوٹ کربھری ہوتی تھی طلبہ ہی ان کاقیمتی اثاثہ تھے،وہ اپنی ذات میں ایک انجمن اورایک جماعت تھے،ان کی موت دینی حلقوں کیلئے ایک قیامت سے کم نہ تھی،فی الواقع موت العالم موت العالم کامنظربھی نظرآرہاہے اوربقول شاعر
بچھڑاکچھ اس اداسے کہ رت ہی بدل گئی         اک شخص جوسارے شہرکوویران کرگیا
حضرت رحمہ اللہ نے اپنی علمی وراثت کی شکل میں جامعہ اپنی اولادکومنتقل کیا،اس کے درودیواربھی ان کی خدمات جلیلہ کی گواہی دیں گے،وہ علمی حیثیت کے اعتبارسے ایسی شمع تھے جس پرپروانے قربان ہوتے تھے،یہی وجہ ہے کہ اتنے دوردرازمقام پرملک کے طول وعرض سے تشنگان علوم دینیہ دیوانہ وارآتے گئے،انہوںنے اپنی حیات مستعارمیں اپنی اولادکی صحیح معنوں میں تربیت کرکے انہیں کندن بنایااب یقینادل کہتاہے کہ ان کے جانشین ادارے کوصحیح سمت کی جانب گامزن رکھے ہوئے ہیں،جس نیک بخت خاتون نے محض رضائے الہی کی خاطریہ قطعہ اراضی وقف کیااس کی روح کوبھی رب العالمین تسکین بہم پہنچائیں گے،مجھے اپنے استاذمحترم رحمہ اللہ کی زندگی کے نشیب وفرازکبھی بھول نہیں سکتے جن میں آپ نے جواں ہمتی کاباکمال مظاہرہ کیاادارہ ہذااس پرفتن دورمیں نمایاں دینی وعلمی خدمات سرانجام دے رہاہے۔
رب العالمین ادارہ ہذاکودن دگنی رات چوگنی ترقی عطافرمائے،اورحضرت رحمہ اللہ کی قبرمبارک جوکہ ادارہ کے درمیان میں واقع ہے نورسے بھر دے،ان کوجنت الفردوس عطافرمائے ان کے اہل خانہ وفرزندان کوان کے نقوش پرچلنے کی توفیق عطافرمائے۔محبین،معاونین ومخلصین کوجزائے جزیل عطافرمائیں ایں دعاازمن وازجملہ جہاں آمین باد
٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭
وجدت احسن مماسمعت!
الشیخ عبیدالرحمن خان الندوی
بنغلادیش نزیل مان کوت ملتان باکستان
بسم اللہ الرحمن الرحیم
الحمدللہ رب العلمین والصلوة والسلام علی سیدالانبیاء والمرسلین وعلی آلہ وصحبہ الی یوم الدین وبعد
یسرنی ان ازورالیوم السبت الجامعة الاشرفیة مان کوت خانیوال ملتان بنجاب باکستان مع الاخ الکریم الاستاذبختیارالبنغلادیشی الذی کان تلمیذاعلی الشیخ المؤسس لھذہ الجامعة رائیت الجامعة من ماسمعت عنھاقبل فرحت جدابزیارة ولقاء ابناء الفقیرالمغفورلہ منھم مدیرالجامعة الآن الاستاذ محمداحمدانورحفظہ اللہ ولاخ ابی بکرالمدنی حفظہ اللہ والاخ مکی حفظلہ اللہ والاخ عمرحفظہ اللہ ایضاھم ابناء کرام ابناء کریم
وکانت ھذہ الزیارة بمناسبة مساہمتنافی المؤتمرالاسلامی المنعقدفی اسلامآبادوبعدنہایة البرامج زرت مدن باکستان المختلفة منھالاہورملتان وساہیوال ومان کوت غیرھاحتی حضرت فی ہذہ المناسبة ولقیت مع العلماء والاساتذة والمدرسین والطلاب ووجدتہم احسن مماسمعت عنھم فی ماقبل وتسعدنی زیارة مقبرة الشیخ المؤسس العظیم نوراللہ مرقدہ ولقدلقینی فرحة وسرورکبیرمماسمعت من مدیرالجامعة عن احلامہ ومشاریعہ وافکارہ عن المستقبل علی افکاروالدہ الماجد۔
ومن مشاہدنی ان القائم باعمال الجامة وزملائہ لھم مستقبل زاہرمنیرواعجبنی مناظرالجامعة الطبیعیة والعلمیة والعملیة وفرحت مزیدبرؤیة المجلة التی تکادتصدرتسھریافی اسرع وقت ممکن حسب ماقال الاخ المدیرواھدی الی نسخہ من المجلة التی صدرت باسم انواراسلام اعرب عن اعجابی وتقدیری بھم ۔
وارجواللہ المولی الکریم ان یوفقہم لمافیہ خیروصالح للامةالمسلمة واتمنی علی اللہ ان یتقبل جمیع نشاطاتھم بقبول   حسن ویجعل قبرالمؤسس المرحوم روضة من ریاض الجنة وصلی اللہ تعالی علی خیرخلقہ محمدوآلہ واصحابہ وسلم ۔
٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭
اعجبتنی بئتھاالدراسیة!
الشیخ القاری الاستاذمحمدیوسف منیرالزمان حفظہ اللہ مکة المکرمة
والشیخ نورالبشرحفظہ اللہ استاذالحدیث جامعہ فاروقیہ کراچی
الحمدللہ رب العالمین وبصلاة والسلام علی سیدنامحمدنبی العربی وعلی آلہ وصحابتہ وتابعیھم ومن تبعہم باحسان الی یوم الدین وبعد
فقدسعدناالیوم بزیارة الجامعہ الاشرفیہ بمان کوت وھی جامعة عریقة ولھاخدمة مشہورة وسعدنابزیارة اساتذتہاوطلابھاواطلعناعلی احوالھم التعلیمیہ ۔
وقداعجبتنابئتھماالدارسیة کثیراکماوفقنااللہ للجلوس مع طلابھافی کلمة قصیرة وسررنابماشاھدنامن جلوسہم واصغائھم واستماعہم للکلمة کماعرفناالشیخ مدیرالجامعہ بماتقوم الجامعة من خدمات۔
ندعواللہ سبحانہ وتعالی ان یدیم علیہم النعمة ویوفقہم للمزیدمن نشرالدعوة والعلم ۔
٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭
اکابرکے آثارکواجاگرکرنے والاادارہ!
مولانامفتی احمدصاحب مدظلہم
مفتی جامعہ العلوم محمدیہ جامع مسجدکلاں ڈی آئی خان
آج بروزمنگل ٣٠جمادی الاولی ١٤٣٠ھ جامعہ اشرفیہ مان کوٹ میں حاضری ہوئی ادارہ ہذاالحمدللہ دین حق کی خدمت کرکے آثاراکابرکواجاگرکرنے میں بہت زیادہ محنت کررہاہے۔
صدرجامعہ حضرت مولانامفتی محمداحمدانورصاحب مدظلہم اورمحنتی وقابل قدراساتذہ کرام کاخلوص اپناجلوہ دکھارہاہے۔
اللہ کریم ادارہ کوہرطرح سے ترقی نصیب فرمائیں آمین ثم آمین
٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭

طلبہ کاجم غفیرجوپورے ملک سے ہے!
حضرت مولانامحمدشریف ہزاروی مدظلہم
خطیب جامع مسجد دارالسلام اسلام آباد
نحمدہ ونصلی علی رسولہ الکریم
جامعہ اشرفیہ مان کوٹ میںآج مورخہ ٠٨۔٤۔٦حاضری نصیب ہوئی،جامعہ میں حاضری کے بعدغم وخوشی کے ملے جلے جذبات سے دوچارہواایک طرف تویہ خوشی تھی کہ اس دوردرازدیہاتی علاقہ میں طلبہ کاایک جم غفیرجن کاتعلق پورے ملک سے ہے نظرآیا،اوردوسری جانب حضرت مولانامحمداشرف شادرحمہ اللہ کی رحلت جوچندیوم قبل ہوئی کاغم حضرت مولانارحمہ اللہ نے اپنے اخلاص وللہیت اوراعلی اخلاق کی بنیادپربے سروسامانی کی حالت میں جوصدقہ جاریہ کی بنیادرکھی،اوران کے فرزندان جس خوش اخلاقی سے اوراعلی ظرفی سے اس کی نگہداشت کررہے ہیں۔
مجھے امیدہے کہ اللہ سبحانہ وتعالی حضرت مولاناکے لگائے ہوئے پودے کوعالم اسلام پرسایہ فگن فرمائیں گے،اللہ سبحانہ وتعالی حضرت مولانامحمداشرف شادرحمہ اللہ کے فرزندان کواپنے محبوب الخلائق والدگرامی کے نقش قدم پرچلائے،اوران کودارین کی سعادتیں نصیب فرمائے آمین

٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭
جنگل میں منگل ہے!
حضرت مولانامفتی عبدالقدوس ترمذی مدظلہم
صدر جامعہ حقانیہ ساہیوال
آج مورخہ ١٢،١١،١٤٢٩ھ کوجامعہ اشرفیہ مان کوٹ میں حاضری کی سعادت حاصل ہوئی،اورطلبہ سے کچھ معروضات پیش کرنے کاموقع ملا،احقرکاعرصہ سے یہ خیال تھاکہ یہاں حاضری ہومخدوم ومکرم حضرت مولانامحمداشرف شادرحمہ اللہ احقرپربڑی شفقت فرماتے تھے،ان سے بھی کئی مرتبہ یہاں حاضری کاتذکرہ ہوا،لیکن ان کی زندگی میں مقدرنہ تھا۔
آج ان کایہ عظیم ادارہ دیکھ کربڑی خوشی ہوئی باوجودیکہ یہ ادارہ شارع عام سے ہٹ کرہے،گویاجنگل میں ہے،لیکن اس کے باوجوداللہ تعالی نے اسے جومرکزیت عطافرمائی ہے،اس کی وجہ سے دوردورسے طلبہ پڑھنے کیلئے یہاں حاضرہوتے ہیں،اس طرح یہاں جنگل میں منگل کاسماںہے،این سعادت بزور بازونیست۔
حضرت مولانارحمہ اللہ کے بڑے بیٹے برادرم مولانامفتی محمداحمدانورزیدمجدہم اپنے والدماجدکے صحیح جانشین ہیں انہی کی طرزپرادارہ کوچلارہے ہیں،س وقت ایک شاندارمسجدکاہال اوربرآمدہ تیارہوچکاہے،اللہ تعالی بقیہ تمام مقاصدکی تکمیل بھی کروائیں اورغیب سے مددفرمائیں،مدرسہ کے اساتذہ کرام بھی نہایت مستعداورمحنتی ہیں حق تعالی سب کوجزائے خیرعطافرمائیں،اورقبولیت سے نوازیں ،مدرسہ کومزیدترقی عطافرمائیں،اورظاہری وباطنی فتن سے اس کی حفاظت فرمائیں آمین ۔

٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭

ممتحنین کی آرا     اگرچہ ہمارے جامعہ کے علاوہ وفاق المدارس کے امتحانات کے دیگرامتحانات جامعہ کے اساتذہ کرام ہی لیاکرتے ہیں ،مگربعض اوقات اپنی خامیوں کوجانچنے کیلئے باہرکے کہنہ مشق اساتذہ کرام کوبھی دعوت دی جاتی ہے،تاکہ موجودہ کمی کی اصلاح کی جاسکے۔
چنانچہ وقتافوقتاجوحضرات امتحانات کیلئے مدعوکیے گئے، ان کے فطری اورواقعی جذبات کوادارہ اپنے لئے باعث سعادت سمجھتاہے توامید ہے کہ قارئین کی بھی تسکین کاسبب ہونگے۔]از:ادارہ[
٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭
حسن تادب کے ساتھ علمی ذوق پرمسرت ہے!
استاذالعلماء حضرت مولاناعبدالمجیدصاحب مدظلہم
شیخ الحدیث جامعہ قاسمیہ شرف الاسلام
چوک سرورشہیدچوک منڈامظفرگڑھ
حامداومصلیاومسلما
آج مورخہ ١٨ربیع الاول ١٤٣٠ھ مطابق ١٦مارچ ٢٠٠٩ء بروزپیرعزیزم محترم مولانامفتی محمداحمدانورزیدحیاتہ کے حکم پرمدرسہ جامعہ اشرفیہ مان کوٹ میں بسلسلہ امتحان ششماہی حاضری کی سعادت نصیب ہوئی مختلف درجات کاامتحان لینے کااتفاق ہوا،طلبہ میں حسن تادب کے ساتھ علمی ذوق دیکھ کرمسرت ہوئی عبارت میں روانگی اوراکثرطلبہ میں ترجمہ میں حسن اداء صورت مسئلہ کی بہترین وضاحت وغیرہ دیکھ کربانی جامعہ حضرت مولانامحمداشرف شادرحمہ اللہ کی محنت وتربیت کے اثرات نمایاں نظرآئے ،لیکن اکثراعلی درجہ میں ہیں اوراس بات پرتواللہ کریم کاکروڑوں دفعہ ہم شکرکرتے ہیں کہ حضرت بانی قدس سرہ کے بعدبھی ان کایہ باغ سدابہارہے ابتداء میں بعض احباب کویہ فکرتھی کہ شایدمدرسہ اب اس نہج پرنہ چل سکے جس نہج پرحضرت بانی رحمہ اللہ چھوڑ کرگئے تھے،لیکن آج جامعہ میں آکراوراس کی تعلیمی تربیتی،انتظامی اموردیکھ کردل باغ باغ ہواکہ الحمدللہ اس نہج میں کمی کی بجائے روبترقی ہے،مدارس عربیہ دین اسلام کے بہترین قلعے ہیں جہاں اسلامی فوج   تیارہورہی ہے عزیزم مفتی محمداحمدانورصاحب مدظلہم کی سعی ومحنت قابل قدر ہے،اساتذہ کرام کا علمی شغف قابل مبارک بادہے،دعاہے کہ اللہ کریم ادارہ کے اساتذہ کارکنان منتظمین کی خدمات کوشرف قبولیت سے نوازے،اوراس ادارہ اوردیگراہل حق کے اداروں کے ساتھ تاقیامت جاری رکھے۔
٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭
اس جامعہ کافیض پوری دنیامیں پھیل رہاہے!
حضرت مولاناقاری محمد عبد اللہ ملتانی صاحب مدظلہم ملتان
نحمدہ ونصلی علی رسولہ الکریم
آج مورخہ ١٢ رجب المرجب ١٤٣٠ بمطابق ٦جولائی ٢٠٠٩بروز پیر محترم عزیزم حضرت مولانا مفتی محمد احمد انور صاحب زید شرفہ صدرجامعہ اشرفیہ مانکوٹ کی دعوت پر درجہ حفظ کی  ٢٠٠٩بروز پیردرجہ حفظ کی کلاسوں کا امتحا ن لینے کے لئے حاضر ہوا ۔اور درجہ حفظ کی تین کلاسوں کامکمل امتحان لیا مجموعی طور پر تینوںدرجات کا نتیجہ اطمینان بخش ہے ۔تمام قراء حضرا ت اپنے اپنے اندازسے محنت کر رہے ہیں ۔الحمد للہ تمام اساتذہ سنجیدہ اور بات ماننے والے فکر مند ہیں۔
امید ہے کہ مزید محنت فرما کر اس علاقہ میں  درجہ کتب کی طرح درجہ قرآن پاک کے معیار کو بھی مثالی بنائیں گے تاکہ درجہ کتب کی طرح درجہ قرآن کے طلباء بھی دور دورسے معیار کی طلب میں داخلہ لینے آئیں اور اپنے مقصد میں کامیاب ہوں ۔کیونکہ جامعہ ھذا کے بانی میرے محسن ومشفق    استاذالعلماء والصلحاء حضرت مولانا محمد اشرف شاد رحمہ اللہ نے اخلاص و کڑھنکے ساتھ جامعہ ہذا کی بنیاد رکھی تھی ۔ انکی محنت کی وجہ سے بڑے بڑے مدارس کے فارغ شدہ علماء کرام بھی اپنی علمی پیاس بجھانے کے لئے آتے تھے ۔اور فارغ ہوکر دوسرے مدارس میں بطور مدرس احسن انداز میں پڑھا رہے ہیں اور جامعہ ھذا کا فیض بالواسطہ و بلاواسطہ پوری دنیا میں پھیل رہا ہے ۔اب ساری فکر اور شوق حضرت استاذیم  کے فرزندموجودہ مہتمم حضرت مفتی محمد احمد انور صاحب میںبدرجہ اتم موجود ہے، جس کے آثار ادارہ میں نمایاں نظر آتے ماشاء اللہ چھوٹی عمر میں بڑی سنجیدگی اور فکر کے ساتھ بہت اچھے انداز میں کام کر رہے ہیں اور جامعہ ھذا اپنی ترقی کی طرف خوب گامزن ہے۔دعا ہے کہ اللہ تعالی تمام اساتذہ حضرات کو بانی جامعہ والی کڑھن اورفکر وشوق عطا فرمائے تاکہ جامعہ ھذا کا فیض تمام شعبوں میں مثالی ہو اور دنیا میں پھلتا پھولتا رہے ۔اور اللہ پاک ہر قسم کے شر اورفتنوں سے محفوظ رکھے اور تمام حضرات کو اخلاص سے کام کرنے کی توفیق نصیب فرمائے آمین ۔
٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭
واقعتاسپوت ثابت ہوئے!
جامع المعقول والمنقول حضرت مولانا داؤداحمدمدظلہم
شیخ الحدیث ومہتمم جامعہ مظاہرالعلوم گوجرانوالہ
باسمہ سبحانہ و تعالیٰ
آج بروز جمعرات٨اپریل ٢٠١٠ء کوحضرت الاستاذحضرت مولانامحمداشرف شادرحمہ اللہ کے قائم کردہ عظیم دینی ادارہ جامعہ اشرفیہ مان کوٹ میں ششماہی امتحان کے موقع پرحضرت والاکے فرزند کی دعوت پربطورممتحن حاضری کی سعادت حاصل ہوئی،درجہ متوسط سے لیکردورہ حدیث تک کے طلبہ کاامتحان لیاماشاء اللہ طلبہ کرام نے بہت اچھاسنایاکتاب کے ساتھ مناسبت خوش کن تھی اللھم زدفزد۔
اللہ تعالی مزیدترقیات سے نوازے باقی ترقی کی کوئی حدنہیں مزیدمحنت اورلگن کی گئی تومزیدنکھارپیداہوگا،حضرت رحمہ اللہ کے فرزندان واقعتاسپوت ثابت ہوئے،جنہوں نے اس ادارہ کوہرحوالے سے ترقی دی۔
اللہ تعالی میرے ان استادزادوں کودین ودنیاکی بھلائی نصیب فرمائیں انکی ہرطرح سے حفاظت فرمائیں اورحضرت رحمہ اللہ کے اس علمی گلشن کوقیامت تک سرسبزوشاداب رکھے،اس ادارہ کے تمام اساتذہ کرام اورتمام معاونین کودارین کی بہترین جزانصیب فرمائیں آمین یارب العالمین
٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭
یہ باغ مزیدپھل پھول رہاہے!
استاذالعلماء حضرت مولانانذیراحمدصاحب مدظلہم
استاذالحدیث جامعہ دارالعلوم الاسلامیہ لاہور
نحمدہ ونصلی علی رسولہ الکریم
آج مورخہ ١٣جولائی بروزجمعرات ٢٠١١ء کومولانامفتی محمداحمدانورصاحب دامت برکاتہم العالیہ کی دعوت پربطورممتحن حاضری ہوئی درجہ صرف سے لیکردورہ حدیث تک کے طلبہ کرام کاامتحان لیا،ماشاء اللہ تمام طلبہ کرام نے بہت اچھاسنایا،جس سے دل خوش ہوا،کہ حضرت اقدس رحمہ اللہ کالگایاہواباغ مزیدپھل پھول رہاہے،اورحضرت کے فرزندزیدمجدہ کی محنت بھی ماشاء اللہ نمایاں ہے اورتمام فرزندان اپنے اپنے فرائض سرانجام دے رہے ہیں۔
ہرایک اپنے اپنے شعبہ میں کام کررہاہے،جس کاثمرہ نمایاں ہے،اورتمام اساتذہ کرام کی بھی محنت نمایاں ہے،دعاہے کہ خداوند قدوس اس جامعہ کومزیدترقی عطافرمائیں اورتمام اساتذہ کرام اورمعلمین کی محنت کوقبول فرمائیں ،آمین
٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭
ملک کے اکثرعلاقوں کے طلبہ کوہردرجہ میں پایا!
استاذالمعقول والمنقول مولانا محمد سلیم صاحب
استاذالحدیث دارالعلوم رحیمیہ ملتان
الحمد لا ھلہ والصلوةلا ھلھا
امابعد آج مورخہ ١١جنوری ٢٠١٠ء بمطابق ٢٤محرم الحرام ١٤٣١ بروز سوموار بحکم برادر مکرم حضرت مولنا مفتی محمداحمد انورصاحب مدظلہ مدیر جامعہ ھٰذاسہ ماہی امتحان کے موقع پر امتحان کے سلسلہ میں حاضری کی سعادت نصیب ہوئی بندہ نے تمام درجات کے طلبہ سے مختلف کتب کا امتحان لیا ۔خوب سیرہوکرسنا اکثرطلبہ کو ذی استعداداور ذوق تعلیم میں نمایاں پایا ۔طلبہ میںعلمی پیاس بجھانے کا شوق غالب ہے ۔اساتذہ اور ادارہ کے ساتھ لگن نمایا ںتھی ۔سب سے بڑی خوبی جس نے بندہ کو بہت متاثر کیا ۔ملک کے اکثر علاقوں کے طلباء کو ہر درجہ میں پایا ۔یہ ادارہ ہذا کی عظیم خوبی ہے ۔مجموعی نظام تعلیم مستحکم کیفیت سے آراستہ ہے ۔مگر بیش بہا چیز کے حصول کیلئے مزید محنت کی اشد ضرورت ہے ۔آخرمیں دعا ہے کہ اللہ اس گلشن شاد کو ہمیشہ شاد وآباد رکھے اور اسکے فیض کو تمام وتام فرمائے ۔
٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭
دل باغ باغ ہوگیا !
استاذالعلماء حضرت مولانامحمدیسین میلسوی مدظلہ
شیخ الحدیث ومدیرجامعہ ابوہریرہ میلسی
بسم اللہ الرحمن الرحیم
حامداللہ تعالی اولاوثانیا
امابعدآج مورخہ ١٦ربیع الاول ١٤٣٠ھ بروزہفتہ عزیزی مولانامفتی محمداحمدانورصاحب مدظلہم کی دعوت پرجامعہ اشرفیہ میں بسلسلہ ششماہی امتحان حاضری دینے کااتفاق ہوا،متوسطہ تاموقوف علیہ ہردرجہ کی ایک ایک کتاب کاامتحان لیابحمداللہ نتیجہ مجموعی طورپرتسلی بخش ہے اورقابل تعریف ہے اورتمام درجات بالاستیعاب ہیں جامعہ میں آکرتعلیمی ترقی دیکھ کردل باغ باغ ہوگیاکہ ہمارے استاذمحترم حضرت مولانامحمداشرف شادرحمہ اللہ رحمة واسعة کالگایاہواباغ انکی حیات کی طرح ہرابھراہے اورطلبہ سے صرف ونحوکی عمدہ خوشبومحسوس ہوئی اورماشاء اللہ بعض طلبہ کی خوب استعدادنظرآئی،جبکہ بعض مدارس میں مفقودہوتی ہے۔
میں سمجھتاہوں کہ یہ استاذمحترم کے اخلاص کا نتیجہ ہے کہ انہوں نے اس جامعہ کی  بنیادوں میں اخلاص کوٹ کوٹ کر بھرا تھا ۔ جسکی وجہ سے یہ چمن پھلا پھولا ہوا ہے ۔نیز عزیزالقدر برادرم مفتی صاحب مدظلہم کی محنت و کاوش تعلیم و تربیت اور ان کے رفقاء کار کی نمایاں خصوصیات سامنے آئیں بحمد للہ حضرت مفتی صاحب احسن انداز میں نظم و نسق چلارہے ہیں ۔اور آئندہ کے جو عزائم ومنصوبہ جات سامنے آئے ہیں انشاء اللہ ضرور پایہ تکمیل کو پہنچ جائیں گے ۔دعاہے کہ رب قدوس اس جامعہ کومزیدترقیات عطافرماوے اورحضرت  کے فرزندان کواستقامت عطافرماوے، اورنظر بدوحاسدین کے حسدسے محفوظ فرمائے،آمین ثم آمین۔
٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭
ماحول پرسکون محنتی ہے!
جامع المعقول والمنقول حضرت مولاناقاری محمداحمدصاحب مدظلہم
استاذالحدیث جا معہ اسلامیہ باب العلوم کہروڑپکا
آج مورخہ ٢٠ربیع الاول ١٤٣٠ھ جامعہ اشرفیہ مان کوٹ حضرت مفتی ظفراقبال دامت برکاتہم کی معیت میں حاضری ہوئی،شعبہ کتب کے مختلف درجات کاامتحان لیاماشاء اللہ طلبہ نے بہت عمدہ سنایادل خوش کردیا،مدرسے کاماحول محنتی اورپرسکون پایااللہ تعالی جامعہ کودن دگنی رات چگنی ترقی عطافرمائین متعلمین ،معلمین ومنتظمین کومزیدہمت واخلاص وقبولیت سے نوازے اللہ تعالی اہل علاقہ کواس نعمت عظمی کی قدرکرنے اوراس سے استفادہ کرنے کی توفیق عطافرمائیں آمین۔
٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭
نتیجہ تسلی بخش ہے!
استاذالقراء مولاناقاری محمداقبال صاحب مدظلہم
جامعہ خیرالمدارس ملتان
حامداومصلیاومسلما
امابعدآج مورخہ ١٢ربیع الاول ١٤٣٣ھ بروزجمعرات حضرت مولانامفتی محمداحمدانورصاحب مدظلہ کی دعوت پرجامعہ اشرفیہ مان کوٹ میں بغرض ششماہی امتحان عزیزقاری محمدفاروق صاحب سلمہ کی معیت میں حاضری ہوئی۔
جامعہ ہذامیں تعداد١٢٥تھی الحمدللہ سب ہی کوحاضرپایا،طلبہ کاامتحان لیامجموعی طورپرنتیجہ تسلی بخش رہااللھم زدفزدالبتہ انفرادی طورپربعض طلبہ میں صحت اورضبط کے لحاظ سے کچھ خامیاں محسوس ہوئی ہیں،جوکہ امتحانی لسٹ میں درج کردی گئی ہیں۔
امیدہے کہ حضرات اساتذہ کرام اپنی مزیدتوجہ سے یہ کمی دورکردینگے،بہرکیف اس پسماندہ علاقہ میں اتنے کام کاہونایہ حضرات اساتذہ کرام کی محنت اورحضرت مہتمم صاحب مدظلہ کی خصوصی توجہ کاثمرہ ہے،دعاہے کہ اللہ تعالی مزیدترقی عطافرمائیں اورشرف قبولیت سے نوازیں آمین ثم آمین یا رب العلمین بجاہ سید المرسلین
٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭